جموں کے بغیر کشمیر نامکمل ہے، منزل کے حصول کے لیے یک زبان ایک ہی مطالبہ “حق خودارادیت ” ناگزیر ہے ‘ڈاکٹر نذیر گیلانی

راولپنڈی (ورلڈ ویوز اردو) جموں کشمیر کونسل فار ہیومن رائٹس کے صدر ڈاکٹر نذیر گیلانی نے کہا ہے کہ جموں کے بغیر کشمیر نامکمل ہے، ہماری تنظیم کسی خاص صوبے کی تنظیم نہیں یے بلکہ پوری ریاست جموں وکشمیر کی نمائندگی کرتی ہے، اکیلے اکیلے منزل حاصل نہیں کی جاسکتی، منزل کے حصول کے لیے یکجا ہونے کی اشد ضرورت ہے ۔
ان خیالات کا اظہار ڈاکٹر نذیر گیلانی نے جموں کی حریت پسند تنظیموں کے نمائندہ وفد سے اپنی رہائش گاہ پر ملاقات کے دوران کیا ۔وفد میں حریت کانفرنس کے جنرل سیکرٹری محمد حسین خطیب، پیرپنجال پیس فاؤنڈیشن کے کنوینر محمود قریشی ایڈوکیٹ، پیر پنجال سول سوسائٹی کے کنوینر مشتاق زرگر، جموں وکشمیر انجمن سیرت کمیٹی کے کنوینر نعیم الحسن خواجہ، جموں کی حریت پسند تنظیموں کے میڈیا انچارج علی حسنین نقوی شامل تھے ۔
اس موقع پر نمائندہ وفد کو اپنے مکمل تعاون کی یقین دہانی کراتے ہوئے ڈاکٹر نذیر گیلانی کا کہنا تھا کہ ہمیں ماضی کی غلطیوں سے سبق سیکھنے کی اشد ضرورت ہے، جموں کی قربانیوں کو کسی قیمت فراموش نہیں کیا جاسکتا، جموں کی اہمیت اتنی ہی ہے جتنی کشمیر کی ہے ۔انہوں نے نمائندہ وفد کی جانب سے علاقہ ازم کو ختم کرکے مل کر کام کرنے کی تجویز کو سراہتے ہوئے کہا کہ یک زبان ہوکر ہمارا ایک ہی مطالبہ “حق خودارادیت کا حصول” ہونا چاہیے تبھی منزل کا حصول ممکن ہے۔
اس موقع پر نمائندہ وفد نے ڈاکٹر نذیر گیلانی کو جموں میں کام کے حوالے سے بریف بھی کیا جسے ڈاکٹر نذیر گیلانی نے سراہا اور مکمل تعاون کی یقین دہانی کرائی ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں