یاسین ملک کی ویڈیو لنک کے ذریعے جموں عدالت میں پیشی

جموں وکشمیر لبریشن فرنٹ کے چیئرمین محمد یاسین ملک اور سینئر پارٹی رہنماءشوکت احمدبخشی جو تہاڑ اور اترپردیش جیلوںمیں غیر قانونی طورپر نظربند ہیں ان کے خلاف کئی برس قبل درج کئے گئے ایک جھوٹے مقدمے میں ویڈیو لنک کے ذریعے جموںکی ٹاڈا عدالت میں پیش کیاگیا۔ کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق ان کے علاوہ حریت رہنماءجاوید احمدمیر، محمد سلیم ننھا جی ، جاویداحمد زرگر ، منظور احمدصوفی ، انجینئر علی محمد میر ، وجاہت بشیر قریشی ، منظور احمد Ghandro، محمد زمان میر اور معراج احمدشیخ بھی ذاتی طورپر عدالت میں پیش ہوئے ۔ محمد یاسین ملک نئی دلی کی تہاڑ جیل اور شوکت احمدبخشی اترپردیش کی امبیڈکر نگر جیل میں غیر قانونی طورپر نظربند ہیں۔ بھارتی پولیس نے محمد یاسین ملک اور دیگر کشمیری رہنماﺅں کے خلاف 1989میں نوہٹہ، معراج گنج اور شہید گنج پولیس اسٹیشنوںمیں کم سے کم تین مقدمات درج کئے تھے ۔ عدالت نے بھارتی فضائیہ کے اہلکار کے قتل اور ڈاکٹر روبیہ سعید کے اغوا سے متعلق مقدمے میںدونوں اطراف کے دلائل سننے کے بعد مقدمے کی سماعت 11جنوری تک ملتوی کردی

2 تبصرے “یاسین ملک کی ویڈیو لنک کے ذریعے جموں عدالت میں پیشی

  1. ھندوستان مردہ باد کشمیری عوام پر ظلم و ستم کا حساب لیا جائے گا کشمیری رہنما جناب یاسین ملک صاحب کو جھوٹے مقدمات میں ملوث کرنا بہت بڑا ظلم ہے

  2. ہمارے جموں کشمیر کے رہنے والوں کو اور خود مختاری اور آذادی پسندوں پر تنقید کرنے سے بہتر ہے حقائق پر مبنی بات کریں تو بہتر ہے کیونکہ اب مزید برداشت نہیں کر سکتے ہیں

اپنا تبصرہ بھیجیں