کورونا وائرس نے وہ کام کردیا جو ویاگرا سے بھی ممکن نہ ہو

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) سائنسدان اپنی تحقیقات میں بتا چکے ہیں کہ کورونا وائرس سے صحت مند ہونے والے مریض دیگر عارضوں کے ساتھ جنسی کمزوری کا شکار بھی ہو سکتے ہیں۔ اب جنسی صحت کے حوالے سے ہی کورونا کا ایک اور انتہائی سنگین نقصان سامنے آ گیا ہے۔ انڈیا ٹائمزکے مطابق یہ نقصان امریکی شہر میامی کے رہائشی ایک شخص میں سامنے آیا ہے جو مسلسل تین گھنٹے تک ایستادگی کا شکار رہا ،ڈاکٹروں کے مطابق یہ ممکنہ طور پر کورونا وائرس کی وجہ سے ہوا۔رپورٹ کے مطابق کورونا وائرس سے صحت مندی کے بعد یہ آدمی ’Priapism‘ نامی عارضے کا شکار ہو گیا۔ یہ ایسا عارضہ ہے جس میں مبتلا مرد  طویل وقت کے لیے جنسی تناؤ کا شکار  رہتا ہے اور اسے شدید تکلیف لاحق ہوتی ہے۔ اس 69سالہ مریض کو کورونا سے صحت مند ہونے کے چند دن بعد ہی دوبارہ اس عارضے کی وجہ سے میامی ویلی ہسپتال لایا گیاجہاں ڈاکٹروں نے علاج کرکے اس کی گلو خلاصی کرائی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں