سات سالوں تک پی ٹی آئی آزادکشمیر کو ون مین شو بنائے رکھا گیا لیکن اب وزیراعظم پاکستان کی ہدایات واضح ہیں:تنویر الیاس

لاہور

وزیراعلی پنجاب کے معاون خصوصی اور تحریک انصاف کے رہنما سردار تنویر الیاس خان نے کہا ہے کہ آزاد کشمیر کے انتخابات میں کامیابی کیلئے تحریک انصاف کو جنگی بنیادوں پر آرگنائز کرنے کی ضرورت ہے۔ہم پہلے ہی کہہ رہے تھے کہ پارٹی چیئرمین وزیراعظم پاکستان عمران خان چاہتے ہیں کہ دوسری پارٹیوں سے صاف وشفاف لوگوں کی شمولیت یقینی بنائیں لیکن بدقستمی سے بعض لوگوں کو یہ بات سمجھ نہیں آرہی تھی اور پارٹی کو ون مین شوکے طور پر چلانا چاہتے تھے۔وزیر اعظم عمران خان نے ثابت کیا ہے کہ وہ کشمیریوں کے سفیر ہیں۔بین الاقوامی فورمز ہوں یا کوئی بھی خاص موقع وہ کشمیریوں کے ساتھ کھڑے ہوتے ہیں۔ یوم یکجہتی کشمیرکے موقع پر بھی آزاد کشمیر کے دورے کا اعلان کرکیانہوں نے کشمیریوں سے محبت کا اظہار ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے لاہور میں میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئیکیا۔وزیراعلی پنجاب کے معاون خصوصی اور تحریک انصاف کے رہنما کا مزید کہنا تھا کہ وزیر اعظم عمران خان نے ہمیں ہدایت کی تھی کہ دوسری جماعتوں سے صاف و شفاف۔باکردار اور دیانتدار لوگوں کو شامل کریں۔انکی ہدایت کے مطابق ہم نے موقف اختیارکیا تھا کہ گذشتہ سات سالوں کے دوران پی ٹی آئی آزادکشمیر کو ون مین شو بنائے رکھا گیا جس کا نتیجہ یہ ہے کہ وزیراعظم نیایک مرتبہ پھر واضع ہدایت کی کہ دوسری جماعتوں سے لوگوں کو شامل کیا جائے۔بعض لوگ ہماری اس رائے کی مخالفت کرتے ہوئے میری کردار کشی تک چلے گئے۔پی ٹی آئی عمران خان کا نام ہے اور وہی ہمارے قائد ہیں۔مجھ سمیت باقی سارے انکے کارکن ہیں۔عمران خان کے وژن کے تحت آزادکشمیر کو فلاحی ریاست بناناچاہتے ہیں۔کل بھی وزیراعظم نے یہی کہا کہ آزادکشمیر کو خوشحال ریاست بناکر کنٹرول لائن کے پار مثبت پیغام دیا جا سکتا ہے۔انہوں نے کہا کہ آزادکشمیر کے آمدہ الیکشن میں چند ماہ باقی رہ گئے ہیں۔اس دوران کامیابی حاصل کرنے کیلئے ہنگامی اور جنگی بنیادوں پر کام کرنے کی ضرورت ہے۔آزادکشمیر کے عوام عمران خان کے وژن کو پسند کرتے ہیں۔مجھے ایمان کی حد تک یقین ہے کہ عمران خان کی قیادت میں تحریک انصاف دو تہائی اکثریت سے کامیابی حاصل کریگی۔ایک سوال کے جواب میں سردار تنویر الیاس نے کہا کہ آزادکشمیر میں تعمیر و ترقی کرکے اسے فلاحی ماڈل سٹیٹ بنایا جاسکتا ہے۔بد قسمتی ہے کہ زلزلے کو 15 سال گذرنے کے باوجود 600 سے زائد تعلیمی اداروں کے ٹینڈر ہی نہیں ہوئے اور بچے کھلے آسمان تلے بیٹھ کر پڑھنے پر مجبور ہے۔اسی طرح ہسپتال بھی لوگوں کو راولپنڈی اور اسلام آباد ریفر کرنے کا ایک ذریعہ بنے ہوئے ہیں۔کسی ایک ادارے کو بھی مثال کے طور پرپیش نہیں کیا جاسکتا۔ آزاد کشمیر کی حکمران جماعت گلگت بلتستان انتخابات کی طرح شکست سے دوچار ہو گی اور لوگ ووٹ کے ذریعے اس کااحتساب کرتے ہوئے پی۔ٹی۔آئی کو کامیاب بنائیں گے۔ایک اور سوال کے جواب میں سردار تنویر الیاس خان نے کہا کہ پاکستان میں پی ڈی ایم کے غبارے سے ہوا نکل چکی ہے۔انا اور کرپشن بچانے کیلئے ہاتھ پاں مارنے والی پی ڈی ایم عمران خان کو کیا ہٹائے گی۔عمران خان نہ صرف اپنی مدت پوری کرینگے بلکہ آنے والے پانچ سال بھی وہی وزیراعظم ہونگے۔سردارتنویرالیاس خان نے کہا کہ عمران خان پاکستان کے پہلے حکمران ہیں جنہوں نے مسئلہ کشمیر ہر عالمی فورم پر بہت خوبصورتی اور پوری دلیری سے اٹھایا جس کی وجہ سے مودی کا انتہا پسند چہرہ بے نقاب ہوا۔5 فروری کو یوم یکجہتی کشمیرنہ صرف آزادکشمیر بلکہ ملک بھر میں منایا جائے گا۔وزیراعظم عمران خان جو ہر ایسے موقع پر کشمیریوں کے ساتھ دلیری سے کھڑے ہوتے ہیں وہ اب کی بار بھی نہ صرف ایل او سی کا دورہ کریں گے بلکہ جلسہ عام سے خطاب بھی کریں گے۔کراچی سے خیبر۔بلوچستان سے اسلام آباد اور گلگت بلتستان سے آزادکشمیر تک پوری قوم مقبوضہ کشمیر کے عوام کے ساتھ یکجہتی کرے گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں