حویلی آزادکشمیر : پیپلزپارٹی اور مسلم لیگ (ن) کی قیادت نے گولی، گالی کی سیاست سے توبہ کرلی ۔۔

حویلی کہوٹہ (ورلڈ ویوز اردو )حویلی میں محبت اور بھائی چارہ امن کا پیغام، محبت کا پیغام ، کردار کی سیاست کا پیغام، گولی گالی کی سیاست سے انکار کا پیغام آج حویلی کے اندر دو سیاسی پارٹیوں کے قائدین کے درمیان اس عزم کا اعادہ کیا گیا کہ سیاسی میدان میں ایک دوسرے کا بھرپور مقابلہ کیا جائے گا لیکن گالم گلوچ ، لڑائی جھگڑا کی سیاست سے اجتناب کیا جائے گا اور حویلی کی سیاست کو آزاد کشمیر میں امن و محبت کا ماڈل بنایا جائے گا۔ تفصیلات کے مطابق حویلی میں پاکستان پیپلز پارٹی آزاد کشمیر اور مسلم لیگ ن کے قائدین اور کارکنان کی ایک میٹنگ ہوئی جس میں بہت بڑی تعداد میں دونوں جماعتوں کے کارکنان نے شرکت کی مسلم لیگ ن ضلع حویلی کی نمائندگی چوہدری محمد عزیز وزیر حکومت نے کی جبکہ پاکستان پیپلز پارٹی آزاد کشمیر کی نمائندگی مرکزی جنرل سیکرٹری راجہ فیصل ممتاز راٹھور نے کی میٹنگ میں اتفاق رائے سے یہ طے پایا کہ آئندہ دونوں سیاسی جماعت کے لیڈران اور کارکنان اشتعال انگیزی اور فتنہ فساد سے اجتناب کریں گے جو فرد کوئی جرم یا انتہا پسندی کرے گا وہ انفرادی حیثیت میں اُس کا ذمہ دار ہوگا۔ سیاسی جماعت کی لیڈر شپ اور ورکرز اس کی سپورٹ نہیں کریں گے علاقے میں امن و امان ، راوداری ، بھائی چارہ کو فروغ د ینے کے لیے مل کر کام کیا جائے گا۔ تمام سیاسی مسائل اور نتازعات کا حل مل بیٹھ کر کیا جائے گا۔ اس علاقے میں ہر الیکشن پر تصادم ہونا ایک معمول بن گیا ہے۔ اس لیے آمدہ الیکشن میں کسی قسم کا کوئی واقعہ رونما نہیں ہونا چاہیے۔ سیاست کو سیاست کی حد تک رکھنا ہے۔ اس آڑ میں قتل و غارت ، افراتفری کی کسی کو اجازت نہیں دی جائے گی۔ مزید یہ طے پایا کہ لیڈران و کارکنان پی پی ضلع حویلی کہوٹہ گگڈار کے مقام پر پی ایم ایل ن کے دو کارکنان جو قتل ہوئے تھے اُن کے ورثا کو مبلغ ستر لاکھ روپے دیت دینے کے پابند ہوں گے۔ اس رقم میں لیڈران اور ورثائے مقتول کی مشاورت سے کمی و بیشی بھی کی جا سکتی ہے۔ اس میٹنگ میں بڑی تعداد میں مختلف برادریوں کے معززین علاقہ نے شرکت کی اور اس فیصلے کو حویلی کی تاریخ کا بڑا فیصلہ قرار دیتے ہوئے خوشی کا اظہار کیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں