بھارت دفاعی اخراجات میں تیسری پوزیشن پر آگیا، “سپری” نے رپورٹ جاری کردی۔

سٹاک ہوم انٹرنیشنل پیس ریسرچ انسٹی ٹیوٹ (سپری) کی جانب سے جاری کردہ رپورٹ کے مطابق 2019 کے دوران دفاعی اخراجات کے معاملے میں انڈیا تیسرے نمبر پر آگیا ہے۔ جاری کردہ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ 2019 میں امریکہ نے دفاع کی مد میں سب سے زیادہ 732 ارب ڈالر خرچ کیے جو دنیا کے مجموعی دفاعی اخراجات کا ٪38 بنتا ہے۔ دنیا بھر میں مجموعی طور پر سال 2019 کے دوران دفاعی اخراجات پر 1 اعشاریہ 9 کھرب ڈالر کی رقم خرچ کی گئی جو 2018 کے مقابلے میں 3 اعشاریہ 6 فیصد زیادہ ہے۔
بھارت کو پہلی مرتبہ یہ مقام حاصل ہوا ہے جب کہ صرف امریکہ اور چین اس سے آگے ہیں۔
رپورٹ کے مطابق 2018 کے مقابلے میں سال 2019 کے دوران بھارت کے دفاعی اخراجات میں 6.8 فی صد کا اضافہ ہوا ہے جس کے بعد اس کا حجم 71 ارب ڈالرز تک پہنچ گیا ہے۔
رپورٹ کے مطابق سال 2010 میں بھارت کے دفاعی اخراجات اس کی مجموعی قومی پیداوار (جی ڈی پی) کا 2.7 فی صد تھے جو 2019 میں کم ہو کر 2.4 فی صد پر آ گئے ہیں۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ بھارت کے دفاعی اخراجات میں اضافے کا ایک سبب پاکستان اور چین کے ساتھ کشیدہ حالات بھی ہیں، ان دونوں ممالک کے ساتھ سرحدوں پر کشیدگی کی وجہ سے بھارت کے دفاعی اخراجات میں اضافہ ہوا ہے۔

سپری کے مطابق دنیا میں امریکہ کے بعد چین نے دفاع پر سب سے زیادہ رقم خرچ کی۔ ایک سال میں چین نے فوجی اخراجات کی مد میں 261 ارب ڈالر خرچ کیے، چین اتنے زیادہ دفاعی اخراجات کے ساتھ عالمی لیول کی فوج بنا رہا ہے تاکہ امریکہ کو ٹکر دے سکے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں